Al-Qari'a( القارعة)
Original,King Fahad Quran Complex(الأصلي,مجمع الملك فهد القرآن)
show/hide
Tahir ul Qadri(طاہر القادری)
show/hide
بِسمِ اللَّهِ الرَّحمٰنِ الرَّحيمِ القارِعَةُ(1)
(زمین و آسمان کی ساری کائنات کو) کھڑکھڑا دینے والا شدید جھٹکا اور کڑک،(1)
مَا القارِعَةُ(2)
وہ (ہر شے کو) کھڑ کھڑا دینے والا شدید جھٹکا اور کڑک کیا ہے،(2)
وَما أَدرىٰكَ مَا القارِعَةُ(3)
اور آپ کیا سمجھے ہیں کہ (ہر شے کو) کھڑ کھڑا دینے والے شدید جھٹکے اور کڑک سے مراد کیا ہے،(3)
يَومَ يَكونُ النّاسُ كَالفَراشِ المَبثوثِ(4)
(اس سے مراد) وہ یومِ قیامت ہے جس دن (سارے) لوگ بکھرے ہوئے پروانوں کی طرح ہو جائیں گے،(4)
وَتَكونُ الجِبالُ كَالعِهنِ المَنفوشِ(5)
اور پہاڑ رنگ برنگ دھنکی ہوئی اُون کی طرح ہو جائیں گے،(5)
فَأَمّا مَن ثَقُلَت مَوٰزينُهُ(6)
پس وہ شخص کہ جس (کے اعمال) کے پلڑے بھاری ہوں گے،(6)
فَهُوَ فى عيشَةٍ راضِيَةٍ(7)
تو وہ خوش گوار عیش و مسرت میں ہوگا،(7)
وَأَمّا مَن خَفَّت مَوٰزينُهُ(8)
اور جس شخص کے (اعمال کے) پلڑے ہلکے ہوں گے،(8)
فَأُمُّهُ هاوِيَةٌ(9)
تو اس کا ٹھکانا ہاویہ (جہنم کا گڑھا) ہوگا،(9)
وَما أَدرىٰكَ ما هِيَه(10)
اور آپ کیا سمجھے ہیں کہ ہاویہ کیا ہے،(10)
نارٌ حامِيَةٌ(11)
(وہ جہنم کی) سخت دہکتی آگ (کا انتہائی گہرا گڑھا) ہے،(11)