Al-Lail( الليل)
Original,King Fahad Quran Complex(الأصلي,مجمع الملك فهد القرآن)
show/hide
Tahir ul Qadri(طاہر القادری)
show/hide
بِسمِ اللَّهِ الرَّحمٰنِ الرَّحيمِ وَالَّيلِ إِذا يَغشىٰ(1)
رات کی قَسم جب وہ چھا جائے (اور ہر چیز کو اپنی تاریکی میں چھپا لے)،(1)
وَالنَّهارِ إِذا تَجَلّىٰ(2)
اور دن کی قَسم جب وہ چمک اٹھے،(2)
وَما خَلَقَ الذَّكَرَ وَالأُنثىٰ(3)
اور اس ذات کی (قَسم) جس نے (ہر چیز میں) نر اور مادہ کو پیدا فرمایا،(3)
إِنَّ سَعيَكُم لَشَتّىٰ(4)
بیشک تمہاری کوشش مختلف (اور جداگانہ) ہے،(4)
فَأَمّا مَن أَعطىٰ وَاتَّقىٰ(5)
پس جس نے (اپنا مال اﷲ کی راہ میں) دیا اور پرہیزگاری اختیار کی،(5)
وَصَدَّقَ بِالحُسنىٰ(6)
اور اس نے (اِنفاق و تقوٰی کے ذریعے) اچھائی (یعنی دینِ حق اور آخرت) کی تصدیق کی،(6)
فَسَنُيَسِّرُهُ لِليُسرىٰ(7)
تو ہم عنقریب اسے آسانی (یعنی رضائے الٰہی) کے لئے سہولت فراہم کر دیں گے،(7)
وَأَمّا مَن بَخِلَ وَاستَغنىٰ(8)
اور جس نے بخل کیا اور (راہِ حق میں مال خرچ کرنے سے) بے پروا رہا،(8)
وَكَذَّبَ بِالحُسنىٰ(9)
اور اس نے (یوں) اچھائی (یعنی دینِ حق اور آخرت) کو جھٹلایا،(9)
فَسَنُيَسِّرُهُ لِلعُسرىٰ(10)
تو ہم عنقریب اسے سختی (یعنی عذاب کی طرف بڑھنے) کے لئے سہولت فراہم کر دیں گے (تاکہ وہ تیزی سے مستحقِ عذاب ٹھہرے)،(10)
وَما يُغنى عَنهُ مالُهُ إِذا تَرَدّىٰ(11)
اور اس کا مال اس کے کسی کام نہیں آئے گا جب وہ ہلاکت (کے گڑھے) میں گرے گا،(11)
إِنَّ عَلَينا لَلهُدىٰ(12)
بیشک راہِ (حق) دکھانا ہمارے ذمہ ہے،(12)
وَإِنَّ لَنا لَلءاخِرَةَ وَالأولىٰ(13)
اور بیشک ہم ہی آخرت اور دنیا کے مالک ہیں،(13)
فَأَنذَرتُكُم نارًا تَلَظّىٰ(14)
سو میں نے تمہیں (دوزخ کی) آگ سے ڈرا دیا ہے جو بھڑک رہی ہے،(14)
لا يَصلىٰها إِلَّا الأَشقَى(15)
جس میں انتہائی بدبخت کے سوا کوئی داخل نہیں ہوگا،(15)
الَّذى كَذَّبَ وَتَوَلّىٰ(16)
جس نے (دینِ حق کو) جھٹلایا اور (رسول کی اطاعت سے) منہ پھیر لیا،(16)
وَسَيُجَنَّبُهَا الأَتقَى(17)
اور اس (آگ) سے اس بڑے پرہیزگار شخص کو بچا لیا جائے گا،(17)
الَّذى يُؤتى مالَهُ يَتَزَكّىٰ(18)
جو اپنا مال (اﷲ کی راہ میں) دیتا ہے کہ (اپنے جان و مال کی) پاکیزگی حاصل کرے،(18)
وَما لِأَحَدٍ عِندَهُ مِن نِعمَةٍ تُجزىٰ(19)
اور کسی کا اس پر کوئی احسان نہیں کہ جس کا بدلہ دیا جا رہا ہو،(19)
إِلَّا ابتِغاءَ وَجهِ رَبِّهِ الأَعلىٰ(20)
مگر (وہ) صرف اپنے ربِ عظیم کی رضا جوئی کے لئے (مال خرچ کر رہا ہے)،(20)
وَلَسَوفَ يَرضىٰ(21)
اور عنقریب وہ (اﷲ کی عطا سے اور اﷲ اس کی وفا سے) راضی ہو جائے گا،(21)