Al-Gashiya( الغاشية)
Original,King Fahad Quran Complex(الأصلي,مجمع الملك فهد القرآن)
show/hide
Tahir ul Qadri(طاہر القادری)
show/hide
بِسمِ اللَّهِ الرَّحمٰنِ الرَّحيمِ هَل أَتىٰكَ حَديثُ الغٰشِيَةِ(1)
کیا آپ کو (ہر چیز پر) چھا جانے والی قیامت کی خبر پہنچی ہے،(1)
وُجوهٌ يَومَئِذٍ خٰشِعَةٌ(2)
اس دن کتنے ہی چہرے ذلیل و خوار ہوں گے،(2)
عامِلَةٌ ناصِبَةٌ(3)
(اﷲ کو بھول کر دنیاوی) محنت کرنے والے (چند روزہ عیش و آرام کی خاطر سخت) مشقتیں جھیلنے والے،(3)
تَصلىٰ نارًا حامِيَةً(4)
دہکتی ہوئی آگ میں جا گریں گے،(4)
تُسقىٰ مِن عَينٍ ءانِيَةٍ(5)
(انہیں) کھولتے ہوئے چشمہ سے (پانے) پلایا جائے گا،(5)
لَيسَ لَهُم طَعامٌ إِلّا مِن ضَريعٍ(6)
ان کے لئے خاردار خشک زہریلی جھاڑیوں کے سوا کچھ کھانا نہ ہوگا،(6)
لا يُسمِنُ وَلا يُغنى مِن جوعٍ(7)
(یہ کھانا) نہ فربہ کرے گا اور نہ بھوک ہی دور کرے گا،(7)
وُجوهٌ يَومَئِذٍ ناعِمَةٌ(8)
(اس کے برعکس) اس دن بہت سے چہرے (حسین) بارونق اور ترو تازہ ہوں گے،(8)
لِسَعيِها راضِيَةٌ(9)
اپنی (نیک) کاوشوں کے باعث خوش و خرم ہوں گے،(9)
فى جَنَّةٍ عالِيَةٍ(10)
عالی شان جنت میں (قیام پذیر) ہوں گے،(10)
لا تَسمَعُ فيها لٰغِيَةً(11)
اس میں کوئی لغو بات نہ سنیں گے (جیسے اہلِ باطل ان سے دنیا میں کیا کرتے تھے)،(11)
فيها عَينٌ جارِيَةٌ(12)
اس میں بہتے ہوئے چشمے ہوں گے،(12)
فيها سُرُرٌ مَرفوعَةٌ(13)
اس میں اونچے (بچھے ہوئے) تخت ہوں گے،(13)
وَأَكوابٌ مَوضوعَةٌ(14)
اور جام (بڑے قرینے سے) رکھے ہوئے ہوں گے،(14)
وَنَمارِقُ مَصفوفَةٌ(15)
اور غالیچے اور گاؤ تکیے قطار در قطار لگے ہوں گے،(15)
وَزَرابِىُّ مَبثوثَةٌ(16)
اور نرم و نفیس قالین اور مَسندیں بچھی ہوں گی،(16)
أَفَلا يَنظُرونَ إِلَى الإِبِلِ كَيفَ خُلِقَت(17)
(منکرین تعجب کرتے ہیں کہ جنت میں یہ سب کچھ کیسے بن جائے گا! تو) کیا یہ لوگ اونٹ کی طرف نہیں دیکھتے کہ وہ کس طرح (عجیب ساخت پر) بنایا گیا ہے،(17)
وَإِلَى السَّماءِ كَيفَ رُفِعَت(18)
اور آسمان کی طرف (نگاہ نہیں کرتے) کہ وہ کیسے (عظیم وسعتوں کے ساتھ) اٹھایا گیا ہے،(18)
وَإِلَى الجِبالِ كَيفَ نُصِبَت(19)
اور پہاڑوں کو (نہیں دیکھتے) کہ وہ کس طرح (زمین سے ابھار کر) کھڑے کئے گئے ہیں،(19)
وَإِلَى الأَرضِ كَيفَ سُطِحَت(20)
اور زمین کو (نہیں دیکھتے) کہ وہ کس طرح (گولائی کے باوجود) بچھائی گئی ہے،(20)
فَذَكِّر إِنَّما أَنتَ مُذَكِّرٌ(21)
پس آپ نصیحت فرماتے رہئے، آپ تو نصیحت ہی فرمانے والے ہیں،(21)
لَستَ عَلَيهِم بِمُصَيطِرٍ(22)
آپ ان پر جابر و قاہر (کے طور پر) مسلط نہیں ہیں،(22)
إِلّا مَن تَوَلّىٰ وَكَفَرَ(23)
مگر جو رُوگردانی کرے اور کفر کرے،(23)
فَيُعَذِّبُهُ اللَّهُ العَذابَ الأَكبَرَ(24)
تو اسے اﷲ سب سے بڑا عذاب دے گا،(24)
إِنَّ إِلَينا إِيابَهُم(25)
بیشک (بالآخر) ہماری ہی طرف ان کا پلٹنا ہے،(25)
ثُمَّ إِنَّ عَلَينا حِسابَهُم(26)
پھر یقیناً ہمارے ہی ذمہ ان کا حساب (لینا) ہے،(26)