Al-Waqi'a( الواقعة)
Original,King Fahad Quran Complex(الأصلي,مجمع الملك فهد القرآن)
show/hide
Abul A'ala Maududi(ابوالاعلی مودودی)
show/hide
بِسمِ اللَّهِ الرَّحمٰنِ الرَّحيمِ إِذا وَقَعَتِ الواقِعَةُ(1)
جب وہ ہونے والا واقعہ پیش آ جائے گا(1)
لَيسَ لِوَقعَتِها كاذِبَةٌ(2)
تو کوئی اس کے وقوع کو جھٹلانے والا نہ ہوگا(2)
خافِضَةٌ رافِعَةٌ(3)
وہ تہ و بالا کر دینے والی آفت ہوگی(3)
إِذا رُجَّتِ الأَرضُ رَجًّا(4)
زمین اس وقت یکبارگی ہلا ڈالی جائے گی(4)
وَبُسَّتِ الجِبالُ بَسًّا(5)
اور پہاڑ اس طرح ریزہ ریزہ کر دیے جائیں گے(5)
فَكانَت هَباءً مُنبَثًّا(6)
کہ پراگندہ غبار بن کر رہ جائیں گے(6)
وَكُنتُم أَزوٰجًا ثَلٰثَةً(7)
تم لوگ اُس وقت تین گروہوں میں تقسیم ہو جاؤ گے(7)
فَأَصحٰبُ المَيمَنَةِ ما أَصحٰبُ المَيمَنَةِ(8)
دائیں بازو والے، سو دائیں بازو والوں (کی خوش نصیبی) کا کیا کہنا(8)
وَأَصحٰبُ المَشـَٔمَةِ ما أَصحٰبُ المَشـَٔمَةِ(9)
اور بائیں بازو والے، تو بائیں بازو والوں (کی بد نصیبی کا) کا کیا ٹھکانا(9)
وَالسّٰبِقونَ السّٰبِقونَ(10)
اور آگے والے تو پھر آگے وا لے ہی ہیں(10)
أُولٰئِكَ المُقَرَّبونَ(11)
وہی تو مقرب لوگ ہیں(11)
فى جَنّٰتِ النَّعيمِ(12)
نعمت بھری جنتوں میں رہیں گے(12)
ثُلَّةٌ مِنَ الأَوَّلينَ(13)
اگلوں میں سے بہت ہوں گے(13)
وَقَليلٌ مِنَ الءاخِرينَ(14)
اور پچھلوں میں سے کم(14)
عَلىٰ سُرُرٍ مَوضونَةٍ(15)
مرصع تختوں پر(15)
مُتَّكِـٔينَ عَلَيها مُتَقٰبِلينَ(16)
تکیے لگا ئے آمنے سامنے بیٹھیں گے(16)
يَطوفُ عَلَيهِم وِلدٰنٌ مُخَلَّدونَ(17)
اُن کی مجلسوں میں ابدی لڑکے شراب چشمہ جاری سے(17)
بِأَكوابٍ وَأَباريقَ وَكَأسٍ مِن مَعينٍ(18)
لبریز پیالے کنٹر اور ساغر لیے دوڑتے پھرتے ہونگے(18)
لا يُصَدَّعونَ عَنها وَلا يُنزِفونَ(19)
جسے پی کر نہ اُن کا سر چکرائے گا نہ ان کی عقل میں فتور آئے گا(19)
وَفٰكِهَةٍ مِمّا يَتَخَيَّرونَ(20)
اور وہ اُن کے سامنے طرح طرح کے لذیذ پھل پیش کریں گے جسے چاہیں چن لیں(20)
وَلَحمِ طَيرٍ مِمّا يَشتَهونَ(21)
اور پرندوں کے گوشت پیش کریں گے کہ جس پرندے کا چاہیں استعمال کریں(21)
وَحورٌ عينٌ(22)
اور ان کے لیے خوبصورت آنکھوں والی حوریں ہونگی(22)
كَأَمثٰلِ اللُّؤلُؤِ المَكنونِ(23)
ایسی حسین جیسے چھپا کر رکھے ہوئے ہوتی(23)
جَزاءً بِما كانوا يَعمَلونَ(24)
یہ سب کچھ اُن اعمال کی جزا کے طور پر انہیں ملے گا جو وہ دنیا میں کرتے رہے تھے(24)
لا يَسمَعونَ فيها لَغوًا وَلا تَأثيمًا(25)
وہاں وہ کوئی بیہودہ کلام یا گناہ کی بات نہ سنیں گے(25)
إِلّا قيلًا سَلٰمًا سَلٰمًا(26)
جو بات بھی ہوگی ٹھیک ٹھیک ہوگی(26)
وَأَصحٰبُ اليَمينِ ما أَصحٰبُ اليَمينِ(27)
اور دائیں بازو والے، دائیں بازو والوں کی خوش نصیبی کا کیا کہنا(27)
فى سِدرٍ مَخضودٍ(28)
وہ بے خار بیریوں(28)
وَطَلحٍ مَنضودٍ(29)
اور تہ بر تہ چڑھے ہوئے کیلوں(29)
وَظِلٍّ مَمدودٍ(30)
اور دور تک پھیلی ہوئی چھاؤں(30)
وَماءٍ مَسكوبٍ(31)
اور ہر دم رواں پانی(31)
وَفٰكِهَةٍ كَثيرَةٍ(32)
اور کبھی ختم نہ ہونے والے(32)
لا مَقطوعَةٍ وَلا مَمنوعَةٍ(33)
اور بے روک ٹوک ملنے والے بکثرت پھلوں(33)
وَفُرُشٍ مَرفوعَةٍ(34)
اور اونچی نشست گاہوں میں ہوں گے(34)
إِنّا أَنشَأنٰهُنَّ إِنشاءً(35)
ان کی بیویوں کو ہم خاص طور پر نئے سرے سے پیدا کریں گے(35)
فَجَعَلنٰهُنَّ أَبكارًا(36)
اور انہیں با کرہ بنا دیں گے(36)
عُرُبًا أَترابًا(37)
اپنے شوہروں کی عاشق اور عمر میں ہم سن(37)
لِأَصحٰبِ اليَمينِ(38)
یہ کچھ دائیں بازو والوں کے لیے ہے(38)
ثُلَّةٌ مِنَ الأَوَّلينَ(39)
وہ اگلوں میں سے بہت ہوں گے(39)
وَثُلَّةٌ مِنَ الءاخِرينَ(40)
اور پچھلوں میں سے بھی بہت(40)
وَأَصحٰبُ الشِّمالِ ما أَصحٰبُ الشِّمالِ(41)
اور بائیں بازو والے، بائیں بازو والوں کی بد نصیبی کا کیا پوچھنا(41)
فى سَمومٍ وَحَميمٍ(42)
وہ لو کی لپٹ اور کھولتے ہوئے پانی(42)
وَظِلٍّ مِن يَحمومٍ(43)
اور کالے دھوئیں کے سائے میں ہوں گے(43)
لا بارِدٍ وَلا كَريمٍ(44)
جو نہ ٹھنڈا ہوگا نہ آرام دہ(44)
إِنَّهُم كانوا قَبلَ ذٰلِكَ مُترَفينَ(45)
یہ وہ لوگ ہوں گے جو اِس انجام کو پہنچنے سے پہلے خوشحال تھے(45)
وَكانوا يُصِرّونَ عَلَى الحِنثِ العَظيمِ(46)
اور گناہ عظیم پر اصرار کرتے تھے(46)
وَكانوا يَقولونَ أَئِذا مِتنا وَكُنّا تُرابًا وَعِظٰمًا أَءِنّا لَمَبعوثونَ(47)
کہتے تھے "کیا جب ہم مر کر خاک ہو جائیں گے اور ہڈیوں کا پنجر رہ جائیں گے تو پھر اٹھا کھڑے کیے جائیں گے؟(47)
أَوَءاباؤُنَا الأَوَّلونَ(48)
اور کیا ہمارے وہ باپ دادا بھی اٹھائے جائیں گے جو پہلے گزر چکے ہیں؟"(48)
قُل إِنَّ الأَوَّلينَ وَالءاخِرينَ(49)
اے نبیؐ، اِن لوگوں سے کہو، یقیناً اگلے اور پچھلے سب(49)
لَمَجموعونَ إِلىٰ ميقٰتِ يَومٍ مَعلومٍ(50)
ایک دن ضرور جمع کیے جانے والے ہیں جس کا وقت مقرر کیا جا چکا ہے(50)
ثُمَّ إِنَّكُم أَيُّهَا الضّالّونَ المُكَذِّبونَ(51)
پھر اے گمراہو اور جھٹلانے والو!(51)
لَءاكِلونَ مِن شَجَرٍ مِن زَقّومٍ(52)
تم شجر زقوم کی غذا کھانے والے ہو(52)
فَمالِـٔونَ مِنهَا البُطونَ(53)
اُسی سے تم پیٹ بھرو گے(53)
فَشٰرِبونَ عَلَيهِ مِنَ الحَميمِ(54)
اور اوپر سے کھولتا ہوا پانی(54)
فَشٰرِبونَ شُربَ الهيمِ(55)
تونس لگے ہوئے اونٹ کی طرح پیو گے(55)
هٰذا نُزُلُهُم يَومَ الدّينِ(56)
یہ ہے بائیں والوں کی ضیافت کا سامان روز جزا میں(56)
نَحنُ خَلَقنٰكُم فَلَولا تُصَدِّقونَ(57)
ہم نے تمہیں پیدا کیا ہے پھر کیوں تصدیق نہیں کرتے؟(57)
أَفَرَءَيتُم ما تُمنونَ(58)
کبھی تم نے غور کیا، یہ نطفہ جو تم ڈالتے ہو(58)
ءَأَنتُم تَخلُقونَهُ أَم نَحنُ الخٰلِقونَ(59)
اس سے بچہ تم بناتے ہو یا اس کے بنانے والے ہم ہیں؟(59)
نَحنُ قَدَّرنا بَينَكُمُ المَوتَ وَما نَحنُ بِمَسبوقينَ(60)
ہم نے تمہارے درمیان موت کو تقسیم کیا ہے، اور ہم اِس سے عاجز نہیں ہیں(60)
عَلىٰ أَن نُبَدِّلَ أَمثٰلَكُم وَنُنشِئَكُم فى ما لا تَعلَمونَ(61)
کہ تمہاری شکلیں بدل دیں اور کسی ایسی شکل میں تمہیں پیدا کر دیں جس کو تم نہیں جانتے(61)
وَلَقَد عَلِمتُمُ النَّشأَةَ الأولىٰ فَلَولا تَذَكَّرونَ(62)
اپنی پہلی پیدائش کو تو تم جانتے ہو، پھر کیوں سبق نہیں لیتے؟(62)
أَفَرَءَيتُم ما تَحرُثونَ(63)
کبھی تم نے سوچا، یہ بیج جو تم بوتے ہو(63)
ءَأَنتُم تَزرَعونَهُ أَم نَحنُ الزّٰرِعونَ(64)
اِن سے کھیتیاں تم اگاتے ہو یا اُن کے اگانے والے ہم ہیں؟(64)
لَو نَشاءُ لَجَعَلنٰهُ حُطٰمًا فَظَلتُم تَفَكَّهونَ(65)
ہم چاہیں تو ان کھیتیوں کو بھس بنا کر رکھ دیں اور تم طرح طرح کی باتیں بناتے رہ جاؤ(65)
إِنّا لَمُغرَمونَ(66)
کہ ہم پر تو الٹی چٹی پڑ گئی(66)
بَل نَحنُ مَحرومونَ(67)
بلکہ ہمارے تو نصیب ہی پھوٹے ہوئے ہیں(67)
أَفَرَءَيتُمُ الماءَ الَّذى تَشرَبونَ(68)
کبھی تم نے آنکھیں کھول کر دیکھا، یہ پانی جو تم پیتے ہو(68)
ءَأَنتُم أَنزَلتُموهُ مِنَ المُزنِ أَم نَحنُ المُنزِلونَ(69)
اِسے تم نے بادل سے برسایا ہے یا اِس کے برسانے والے ہم ہیں؟(69)
لَو نَشاءُ جَعَلنٰهُ أُجاجًا فَلَولا تَشكُرونَ(70)
ہم چاہیں تو اسے سخت کھاری بنا کر رکھ دیں، پھر کیوں تم شکر گزار نہیں ہوتے؟(70)
أَفَرَءَيتُمُ النّارَ الَّتى تورونَ(71)
کبھی تم نے خیال کیا، یہ آگ جو تم سلگاتے ہو(71)
ءَأَنتُم أَنشَأتُم شَجَرَتَها أَم نَحنُ المُنشِـٔونَ(72)
اِس کا درخت تم نے پیدا کیا ہے، یا اس کے پیدا کرنے والے ہم ہیں؟(72)
نَحنُ جَعَلنٰها تَذكِرَةً وَمَتٰعًا لِلمُقوينَ(73)
ہم نے اُس کو یاد دہانی کا ذریعہ اور حاجت مندوں کے لیے سامان زیست بنایا ہے(73)
فَسَبِّح بِاسمِ رَبِّكَ العَظيمِ(74)
پس اے نبیؐ، اپنے رب عظیم کے نام کی تسبیح کرو(74)
۞ فَلا أُقسِمُ بِمَوٰقِعِ النُّجومِ(75)
پس نہیں، میں قسم کھاتا ہوں تاروں کے مواقع کی(75)
وَإِنَّهُ لَقَسَمٌ لَو تَعلَمونَ عَظيمٌ(76)
اور اگر تم سمجھو تو یہ بہت بڑی قسم ہے(76)
إِنَّهُ لَقُرءانٌ كَريمٌ(77)
کہ یہ ایک بلند پایہ قرآن ہے(77)
فى كِتٰبٍ مَكنونٍ(78)
ایک محفوظ کتاب میں ثبت(78)
لا يَمَسُّهُ إِلَّا المُطَهَّرونَ(79)
جسے مطہرین کے سوا کوئی چھو نہیں سکتا(79)
تَنزيلٌ مِن رَبِّ العٰلَمينَ(80)
یہ رب العالمین کا نازل کردہ ہے(80)
أَفَبِهٰذَا الحَديثِ أَنتُم مُدهِنونَ(81)
پھر کیا اس کلام کے ساتھ تم بے اعتنائی برتتے ہو(81)
وَتَجعَلونَ رِزقَكُم أَنَّكُم تُكَذِّبونَ(82)
اور اِس نعمت میں اپنا حصہ تم نے یہ رکھا ہے کہ اِسے جھٹلاتے ہو؟(82)
فَلَولا إِذا بَلَغَتِ الحُلقومَ(83)
تو جب مرنے والے کی جان حلق تک پہنچ چکی ہوتی ہے(83)
وَأَنتُم حينَئِذٍ تَنظُرونَ(84)
اور تم آنکھوں سے دیکھ رہے ہوتے ہو کہ وہ مر رہا ہے،(84)
وَنَحنُ أَقرَبُ إِلَيهِ مِنكُم وَلٰكِن لا تُبصِرونَ(85)
اُس وقت تمہاری بہ نسبت ہم اُس کے زیادہ قریب ہوتے ہیں مگر تم کو نظر نہیں آتے(85)
فَلَولا إِن كُنتُم غَيرَ مَدينينَ(86)
اب اگر تم کسی کے محکوم نہیں ہو اور اپنے اِس خیال میں سچے ہو،(86)
تَرجِعونَها إِن كُنتُم صٰدِقينَ(87)
اُس وقت اُس کی نکلتی ہوئی جان کو واپس کیوں نہیں لے آتے؟(87)
فَأَمّا إِن كانَ مِنَ المُقَرَّبينَ(88)
پھر وہ مرنے والا اگر مقربین میں سے ہو(88)
فَرَوحٌ وَرَيحانٌ وَجَنَّتُ نَعيمٍ(89)
تو اس کے لیے راحت اور عمدہ رزق اور نعمت بھری جنت ہے(89)
وَأَمّا إِن كانَ مِن أَصحٰبِ اليَمينِ(90)
اور اگر وہ اصحاب یمین میں سے ہو(90)
فَسَلٰمٌ لَكَ مِن أَصحٰبِ اليَمينِ(91)
تو اس کا استقبال یوں ہوتا ہے کہ سلام ہے تجھے، تو اصحاب الیمین میں سے ہے(91)
وَأَمّا إِن كانَ مِنَ المُكَذِّبينَ الضّالّينَ(92)
اور اگر وہ جھٹلانے والے گمراہ لوگوں میں سے ہو(92)
فَنُزُلٌ مِن حَميمٍ(93)
تو اس کی تواضع کے لیے کھولتا ہوا پانی ہے(93)
وَتَصلِيَةُ جَحيمٍ(94)
اور جہنم میں جھونکا جانا(94)
إِنَّ هٰذا لَهُوَ حَقُّ اليَقينِ(95)
یہ سب کچھ قطعی حق ہے(95)
فَسَبِّح بِاسمِ رَبِّكَ العَظيمِ(96)
پس اے نبیؐ، اپنے رب عظیم کے نام کی تسبیح کرو(96)