Al-Gashiya( الغاشية)
Original,King Fahad Quran Complex(الأصلي,مجمع الملك فهد القرآن)
show/hide
Abul A'ala Maududi(ابوالاعلی مودودی)
show/hide
بِسمِ اللَّهِ الرَّحمٰنِ الرَّحيمِ هَل أَتىٰكَ حَديثُ الغٰشِيَةِ(1)
کیا تمہیں اُس چھا جانے والی آفت کی خبر پہنچی ہے؟(1)
وُجوهٌ يَومَئِذٍ خٰشِعَةٌ(2)
کچھ چہرے اُس روز خوف زدہ ہونگے(2)
عامِلَةٌ ناصِبَةٌ(3)
سخت مشقت کر رہے ہونگے(3)
تَصلىٰ نارًا حامِيَةً(4)
تھکے جاتے ہونگے، شدید آگ میں جھلس رہے ہونگے(4)
تُسقىٰ مِن عَينٍ ءانِيَةٍ(5)
کھولتے ہوئے چشمے کا پانی انہیں پینے کو دیا جائے گا(5)
لَيسَ لَهُم طَعامٌ إِلّا مِن ضَريعٍ(6)
خار دار سوکھی گھاس کے سوا کوئی کھانا اُن کے لیے نہ ہوگا(6)
لا يُسمِنُ وَلا يُغنى مِن جوعٍ(7)
جو نہ موٹا کرے نہ بھوک مٹائے(7)
وُجوهٌ يَومَئِذٍ ناعِمَةٌ(8)
کچھ چہرے اُس روز با رونق ہوں گے(8)
لِسَعيِها راضِيَةٌ(9)
اپنی کار گزاری پر خوش ہونگے(9)
فى جَنَّةٍ عالِيَةٍ(10)
عالی مقام جنت میں ہوں گے(10)
لا تَسمَعُ فيها لٰغِيَةً(11)
کوئی بیہودہ بات وہاں نہ سنیں گے(11)
فيها عَينٌ جارِيَةٌ(12)
اُس میں چشمے رواں ہونگے(12)
فيها سُرُرٌ مَرفوعَةٌ(13)
اُس کے اندر اونچی مسندیں ہوں گی(13)
وَأَكوابٌ مَوضوعَةٌ(14)
ساغر رکھے ہوئے ہوں گے(14)
وَنَمارِقُ مَصفوفَةٌ(15)
گاؤ تکیوں کی قطاریں لگی ہوں گی(15)
وَزَرابِىُّ مَبثوثَةٌ(16)
اور نفیس فرش بچھے ہوئے ہوں گے(16)
أَفَلا يَنظُرونَ إِلَى الإِبِلِ كَيفَ خُلِقَت(17)
(یہ لوگ نہیں مانتے) تو کیا یہ اونٹوں کو نہیں دیکھتے کہ کیسے بنائے گئے؟(17)
وَإِلَى السَّماءِ كَيفَ رُفِعَت(18)
آسمان کو نہیں دیکھتے کہ کیسے اٹھایا گیا؟(18)
وَإِلَى الجِبالِ كَيفَ نُصِبَت(19)
پہاڑوں کو نہیں دیکھتے کہ کیسے جمائے گئے؟(19)
وَإِلَى الأَرضِ كَيفَ سُطِحَت(20)
اور زمین کو نہیں دیکھتے کہ کیسے بچھائی گئی؟(20)
فَذَكِّر إِنَّما أَنتَ مُذَكِّرٌ(21)
اچھا تو (اے نبیؐ) نصیحت کیے جاؤ، تم بس نصیحت ہی کرنے والے ہو(21)
لَستَ عَلَيهِم بِمُصَيطِرٍ(22)
کچھ ان پر جبر کرنے والے نہیں ہو(22)
إِلّا مَن تَوَلّىٰ وَكَفَرَ(23)
البتہ جو شخص منہ موڑے گا اور انکار کرے گا(23)
فَيُعَذِّبُهُ اللَّهُ العَذابَ الأَكبَرَ(24)
تو اللہ اس کو بھاری سزا دے گا(24)
إِنَّ إِلَينا إِيابَهُم(25)
اِن لوگوں کو پلٹنا ہماری طرف ہی ہے(25)
ثُمَّ إِنَّ عَلَينا حِسابَهُم(26)
پھر اِن کا حساب لینا ہمارے ہی ذمہ ہے(26)